Type Here to Get Search Results !

Mola Ali As K Aqwal In Urdu Part 1

 

اقوال مولا علی علیہ السلام

 

1.  عقل مند اور دور اندیش وہ ہے جسے اس کی دنیا اسے آخرت سے غافل نہ کرے۔

2. حالات کے دگرگوں ہونے سے لوگوں کے جو ہر پہچانے جاتے ہیں۔اور دن تمہارے لیے چھپے رازوں کو نمایاں کرتے ہیں۔

3. حسن تین چیزوں میں ہے۔ حلال کھانا، حرام سے بچنا،اہل و عیال کے لیے آرام وسکوں مہیا کرنا۔

4. بردباری ڈھاپنے والا پردہ ہے، عقل کاٹنے والی تلوار ہے، اپنے کردار کی خامیوں کو اپنے حلم سے ڈھاپنوں اور اپنی خواہشات کو اپنے علم سے قتل کرو۔

5. ظلم پاؤں کو لڑاکھڑا دیتا ہے نعمتوں کو چھین لیتا ہے اور امتوں کو ہلاک کردیتا ہے۔

6.  رشتے داروں کی دشمنی بچھوؤں سے بھی سخت ہے۔

7.  لالچ انسان کی عزت کو گھٹاتا ہے اس کے رزق کو زیادہ نہیں کرتا۔

8.  قناعت کرنے والا غنی  ہے، اگرچہ وہ بھوکا اور ننگا ہی کیوں نہ ہو۔

9.  جو تھوڑے پر قناعت نہیں کرتا اسے زیادہ بھی فائدہ نہیں پہچاتا۔

10.                  جو زاہد ہو گاکبھی فقیر نہیں ہوگا۔

11.                  کنجوس کا کوئی دوست نہیں ہوتا۔

12.      کنجوسی تمام عیبوں کو اکھٹا کرنے والی ہے اور اسکی لگام  ہے جو برائی کی طرف کھنچی ہے۔

13.                  دوسروں کے بھید محفوظ رکھنا ہی امانتداری ہے۔

14.                  راز فاش کرنا خیانت کی کرو ہ صورت ہے۔

15.      انسان اپنی زبان کے نیچے چھپا ہوا ہے جب بولتا ہے تو ظاہر ہوجاتا ہے۔

16.      عقل مند پر لازم ہے کہ دوسرے عقلاء کی رائے کو قبول کرے اور اپنے علم کے ساتھ دانشوروں کے علم کو ملائے۔

17.      دینا کے جانے سے پہلے اپنے دلوں کو بھیج دو  کیونکہ یہ دنیا مقام امتحان ہے اور تمہیں ایک دوسری چیز( جنت) کے لیے پیدا کیا گیا ہے۔

18.      توبہ کے چار ستوں ہے ۔ دل سے ندامت ، پشیمانی ،زبان سے طلب مغفرت، اعضائے بدن سے عمل اور دوبارہ نہ کرنے کا پختہ ارادہ۔

19.      زیادہ سخاوت کرنا دوستوں میں اضافہ کرتا ہے اور دشمنوں کو دوست بناتا ہے۔

20.                   انجام پر نظر رکھنا اور عقل مندوں سے مشورہ کرنا دور اندیشی ہے۔

21.      سیکھنے کےلئے پوچھو نہ کہ اذیت کےلیے کیونکہ جاہل طالب علم عالم کی مانند ہےاور بے عمل جاہل کی مانند ہے۔

22.      جو دوران تعلیم استاد کی ڈانٹ ڈپٹ کو برداشت نہیں کرتا وہ ہمیشہ جہالت میں غرق رہے گا۔

23.      علم اتنا زیادہ ہے کہ اسکا احاطہ ممکن نہیں پس جو بھی اچھا علم ہے حاصل کرو۔

24.      جس کا کوئی ماضی نہ ہو علم اس کے لیے سب سے افضل عزت و شرف ہے۔

25.      کامل عامل وہ ہوتا ہے جو لوگوں کو اللہ کی رحمت سے مایوس نہ کرے اور نہ اللہ کے عذاب سے انہیں محفوظ قرار دے۔

26.                   عالم جاہل کو پہچان لیتا ہے کیونکہ وہ بھی اس سے پہلے جاہل تھا۔

27.      جو بچپن میں علم حاصل نہیں کرتا  وہ بڑھاپے میں آگے نہیں بڑھ سکتا۔

28.      جو کوئی عمل کیلئے علم حاصل کریں وہ اسکی سختیوں سے پریشان نہیں ہوگا۔

29.      علم حکمت و دانائی کا پھل ہے اور صحت ودرستگی اسکی شاخیں ہیں۔علم نفس کو زندگی ،عقل کو روشنی عطا کرتا ہے جبکہ جہالت کو مارتا ہے۔عالم کبھی علم سے سیر نہیں ہوتا اور نہ ہی اس سے کسی کو سیر کر سکتا ہے۔

30.      علم  عقل پر دلالت کرتا ہے جس نے علم حاصل کیا وہ عقل مند بن گیا ۔

Tags

Post a Comment

0 Comments
* You are welcome to share your ideas with us in comments.